Can we benefit from the work of Abu Ishaaq al-Huwainee and 'Umr Abdul Mun'am Saleem? – Shaykh Muhammad bin Umar Bazmool

کیا ابو اسحاق الحوینی اور عمرو عبدالمنعم سلیم سے استفادہ کیا جاسکتا ہے؟

فضیلۃ الشیخ محمد بن عمر بازمول حفظہ اللہ

(سنئیر پروفیسر جامعہ ام القری ومدرس مسجد الحرام، مکہ مکرمہ)

مصدر: بازمول ڈاٹ کام۔

ترجمہ: طارق علی بروہی

پیشکش: توحیدِ خالص ڈاٹ کام


بسم اللہ الرحمن الرحیم

سوال: سائل پوچھتا ہے محدث ابو اسحاق الحوینی کے بارے میں آپ کی کیا رائے ہے اسی طرح سے کتاب ’’تيسير علوم الحديث‘‘ کے متعلق آپ کیا کہتے ہیں؟

جواب: میں یہ کہتا ہوں کہ ابو اسحاق کے لیے شہادت دی جاتی ہے کہ اسے تخریج حدیث کا فہم ومعرفت ہے لیکن ساتھ ہی اس کے ایسے اقوال بھی منقو ل ہیں کہ جو اہل سنت والجماعت کے منہج کے مخالف ہيں بہت سے مسائل میں۔ لہذا اس سے اہل بدعت والا معاملہ کرنا چاہیے۔ اور اہل سنت میں سے دوسرے بھی ہیں جو تخریج کے معاملے میں ماہر ہیں جو اس شخص کی جانب رجوع کرنے سے مستغنی کردیتے ہیں۔ کیونکہ جس طریقے پر سلف صالحین تھے وہ ایک طالبعلم اس بات کا متقاضی ہے کہ اہل بدعت کے گروہ کی کثرت کا سبب بننے یا ان کے منار کو بلند کرنےیا ان کی شوکت کو قوی کرنےکا سبب بننے سے ڈرے۔ جبکہ ان کی کتب کی جانب رجوع کرنے اور ان سے استفادہ کرنے کی صورت میں ان میں سے کسی چیز میں واقع ہونے کا خدشہ ہے۔ حالانکہ اہل سنت کی تخریج یا مصطلح کے تعلق سے کتب میں وہ کچھ پہلے ہی موجود ہے جو اس ابو اسحاق کی کتب کی جانب رجوع کرنے سے مستغنی کردیتا ہیں۔

اور جہاں تک معاملہ ہے عمرو عبدالمنعم سلیم کی کتاب کا تو یہ عمرو عبدالمنعم سلیم کی علوم حدیث کے تعلق سے ایک خاص جہت ہے جو اس چیز کے مخالف ہے جس پر جمہور اہل علم ہیں تو ضروری ہے کہ اس کی مؤلفات سے اور ان کی جانب رجوع کرنے سے بچا جائے۔ اور آپ لوگوں کے پاس قاعدہ ویسے ہی موجود ہے لہذا اس کی کتاب کو چھوڑ دیں اور اس علم میں جو اصلی واصولی کتب ہیں ان کی جانب رجوع کریں۔ کیا ضرورت ہے عمرو عبدالمنعم یا فلاں کی طرف جانے کی۔ ابن الصلاح اور اس کےآس پاس کی مختصرات جیسے تدریب الراوی اور مقدمہ ابن الصلاح وغیرہ جیسی کتب  کہ جن پر اہل علم چلے ہیں، ان میں کلام کیا ہے، ان سے اخذ کیا ہے اور اہل علم نے ان پر اعتماد کیا ہے انہيں چھوڑ کر اس قسم کی مؤلفات کی طرف جانے کی آخر کیا ضرورت ہے؟

کیوں کم تر  کی طرف جاتے ہیں جبکہ آپ کے پاس اعلیٰ چیز موجود ہے؟۔