The noble status of the prophet ‘Essa (Jesus) (alayhis-salam) in Islaam – Shaykh Rabee’ bin Hadee Al-Madkhalee

اسلام میں عیسی علیہ الصلاۃ والسلام  کا مقام ومرتبہ

فضیلۃ الشیخ ربیع بن ہادی المدخلی حفظہ اللہ

(سابق صدر شعبۂ سنت، مدینہ یونیورسٹی)

ترجمہ: طارق بن علی بروہی

مصدر: مكانة عيسى عليه السلام في الإسلام

پیشکش: توحیدِ خالص ڈاٹ کام


فرمان باری تعالی ہے:

(تو اس (مریم) نے اس (بچے) کی طرف اشارہ کر دیا، انہوں نے کہا ہم اس سے کیسے بات کریں جو ابھی تک گہوارے میں بچہ ہے، اس نے کہا بے شک میں اللہ کا بندہ ہوں، اس نے مجھے کتاب دی اور مجھے نبی بنایا ہے، اور مجھے بابرکت بنایا جہاں بھی میں ہوں اور مجھے نماز اور زکوٰۃ کی وصیت کی، جب تک میں زندہ رہوں، اور اپنی والدہ کے ساتھ اچھا سلوک کرنے والا (بنایا) اور مجھے سرکش، بدبخت نہیں بنایا، اور خاص سلامتی ہے مجھ پر جس دن میں پیدا ہوا اور جس دن فوت ہوں گا اور جس دن زندہ ہو کر اٹھایا جاؤں گا، یہ ہے عیسیٰ ابن مریم۔(ان کے بارے میں یہی) حق کی بات ہے، جس میں یہ شک کرتے ہیں، کبھی اللہ کے لائق نہ تھا کہ وہ کوئی بھی اولاد بنائے، وہ پاک ہے، جب کسی کام کا فیصلہ کرتا ہے تو اس سے صرف یہ کہتا ہے کہ ’’ہوجا‘‘ تو وہ ہوجاتا ہے، اور بے شک اللہ ہی میرا رب اور تمہارا رب ہے، سو اسی کی عبادت کرو، یہی سیدھا راستہ ہے، پھر ان گروہوں نے اپنے درمیان اختلاف کیا تو ان لوگوں کے لیے جنہوں نے کفر کیا، ایک بڑے دن کی حاضری کی وجہ سے بڑی ہلاکت ہے، کس قدر سننے والے ہوں گے وہ اور کس قدر دیکھنے والے جس دن وہ ہمارے پاس آئیں گے، لیکن ظالم لوگ آج کھلی گمراہی میں ہیں) [مریم: 29-38]