Teachings of Shirk in the Drama “Ertuğrul” – Tariq bin Ali Brohi

ارطغرل ڈرامے میں شرکیات کی تعلیم

جمع و ترتیب: طارق بن علی بروہی

مصدر: کتاب و سنت۔

پیشکش: توحیدِ خالص ڈاٹ کام


بسم اللہ الرحمن الرحیم

شیخ مقبل بن ہادی الوادعی رحمہ اللہ فرماتے ہیں:

جو کوئی اللہ کی راہ میں قتال کرتا ہے وہ اپنی جان کو خطرے میں ڈالتا ہے اور معرکے میں اپنی جان لٹا کر موت کو گلے لگا لیتا ہے پھر وہ کیسے اپنے رب سے ملاقات کرے گا جبکہ وہ ان شرکیات میں ملوث ہو، اور ان شرکیات کا دفاع کرتا ہو، لازم ہے کہ سب سے پہلے عقیدہ کی صفائی اور اسے خالص کیا جائے۔ واللہ المستعان۔اھ

اللہ جانے اس ارطغرل ڈرامے کی مختلف اقساط میں پتہ نہيں کیا کچھ دکھایا گیا ہوگا سردست اس کے پہلے سیزن کی پانچویں قسط 11:20 تا 11:40منٹ پر صوفی حضرت کو فوت شدہ اولیاء میں سے شیخ پیر عبدالقادر جیلانی : (جنہیں شرک کرنے والے غوث اعظم  دستگیر پکارتے ہيں) کو مدد کے لیے پکارتے ہوئے دکھایا گیا ہے، یعنی  یہ واضح طور پر غیراللہ کواسباب سے بالاتر  استعانت کے لیے پکارنا ہے  جو کہ شرک اکبر ہے اور انسان کو دائرۂ اسلام سے خارج کردیتا ہے۔

تفصیل کے لیے مکمل مقالہ پڑھیں۔

ertughrul_drama_shirkiyaat