Performing ‘Umrah in Ramadan is equivalent to performing Hajj with the prophet صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

رمضان المبارک میں عمرہ کرنے کا ثواب نبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم  کے ساتھ حج کرنے کے جیسا ہے

ترجمہ و ترتیب: طارق بن علی بروہی

مصدر: مختلف مصادر۔

پیشکش: توحیدِ خالص ڈاٹ کام


بسم اللہ الرحمٰن الرحیم

ایک دفعہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ایک انصاری عورت ام سنان  رضی اللہ عنہا سے پوچھا:

تمہیں کس چیز نے ہمارے ساتھ حج کرنے سے روکا؟ تو اس نے جواب دیا : ہمارے پاس صرف دو اونٹ ہیں، ایک پر میرا شوہر اور بیٹا حج کرنے چلے گئے اور دوسرا ہمارے پاس کھیتوں کو سیراب کرنے کے لیے چھوڑ گئے ہيں، تو آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا:

” فَإِذَا جَاءَ رَمَضَانُ فَاعْتَمِرِي، فَإِنَّ عُمْرَةً فِيهِ تَعْدِلُ حَجَّةً “

 (جب رمضان آئے تو عمرہ کرلینا، کیونکہ بے شک اس میں عمرہ کرنا حج کے برابر ہے)

اور ایک روایت میں ہے:

” أَوْ حَجَّةً مَعِي “([1])

(یا میرے ساتھ حج کرنے کے برابر ہے)۔

شیخ ابن عثیمین  رحمہ اللہ  فرماتے ہیں:

بعض علماء کہتے ہيں یہ صرف اس خاتون کے ساتھ خاص تھا، جبکہ جمہور علماء کے نزدیک یہ فضیلت عام ہے اور یہی زیادہ صحیح بات ہے۔ اور یہاں حج کے برابر سے مراد اس کا ثواب ہے یعنی فرض حج کی ادائیگی سے انسان برئ الذمہ نہیں ہوتا([2])۔


[1] صحیح بخاری 1863، صحیح مسلم۔

[2] مفہوم اللقاء الشهري 3 / 34۔

ramadan_umrah_sawab