Whom does Hell call to itself? – Imaam Abu Muhammad Al-Husayn bin Mas’ud Al-Baghwee

جہنم کن لوگوں کو بلاتی ہے؟

امام ابو محمد الحسین بن مسعود البغوی رحمہ اللہ المتوفی سن 516ھ

ترجمہ: اسامہ بن طارق رحمانی

مصدر: تفسیر البغوی ص 516۔

پیشکش: توحیدِ خالص ڈاٹ کام


بسم اللہ الرحمن الرحیم

اللہ تعالی کا فرمان ہے:

﴿تَدْعُوْا مَنْ اَدْبَرَ وَتَوَلّٰى﴾ (المعارج: 17)

(وه ہر اس شخص کو پکارے گی جو پیچھے ہٹتا اور منہ موڑتا ہے)

﴿ تَدْعُوْا﴾  (وه پکارے گی) یعنی: نارِ [جہنم] اپنی طرف ﴿مَنْ اَدْبَرَ﴾   (ہر [ایسے شخص کو] جو پیچھے ہٹتا ہے) ایمان سے ﴿وَتَوَلّٰى﴾    (اور منہ موڑتا ہے) حق سے، تو [جہنم] اس سے کہے گی: میری طرف آ اے مشرک! میری طرف آ اے منافق! میری طرف آ،  میری طرف آ!

 ابن عباس رضی اللہ عنہما  نے فرمایا :

’’ تدعو الكافرين والمنافقين بأسمائهم بلسان فصيح ثم تلتقطهم كما يلتقط الطير الحب“

 (جہنم کفار اور منافقین کو ان کے ناموں سے فصیح زبان میں پکارے گی پھر ان کو اس طرح چن چن کے اچک لے گی جیسے پرندہ زمین سے دانا چن چن کے اچک لیتا ہے)۔

jahannam_kin_logo_ko_bulati_hai