menu close menu

بچوں کے سرہانے قرآن مجید رکھنا – شیخ صالح بن فوزان الفوزان

Placing Qura'an near sleeping children – Shaykh Saaleh bin Fawzaan Al-Fawzaan

بچوں کے سرہانے قرآن مجید رکھنا

فضیلۃ الشیخ صالح بن فوزان الفوزان حفظہ اللہ

ترجمہ: نعمان اسماعیل

مصدر: جادو ٹونہ کے فرد اور معاشرے پر خطرناک اثرات سے ماخوذ۔

پیشکش: توحیدِ خالص ڈاٹ کام


بسم اللہ الرحمن الرحیم

سوال : فضیلۃ الشیخ ، ایک عورت گھر کے کام کاج کے دوران جب مصروف ہوتی ہے تو اپنے بچے کے سرہانے قرآن مجید رکھ دیتی ہے تاکہ وہ جنات سے محفوظ رہ سکے ، اس بارے میں آپ کی کیا رائے ہے ؟

جواب : یہ جائز نہیں ، یہ قرآن کی بے حرمتی ہے ، قرآن مجید کو بچے سے دور محفوظ جگہ پر رکھنا لازم ہے ، یہ کوئی جائز شریعت مطہرہ کا بتایا ہوا عمل نہیں کہ مصحف کو بچے کے سرہانے رکھا جائے ، بچے کے سینے پر یا اس کے سرہانے قرآن مجید رکھنا جبکہ بچہ سو رہا ہو کوئی شرعی عمل نہیں ، قرآن مجید کو محفوظ جگہ پر عزت کے ساتھ رکھنا چاہیے ۔

October 5, 2012 | الشيخ صالح بن فوزان الفوزان, قرآن وتفسیر, مقالات | 0

tawheedekhaalis is on Mixlr

Tawheedekhaalis.com

Tawheedekhaalis.com