زلزلوں سے متعلق نصیحت – شیخ عبدالعزیز بن عبداللہ بن باز

زلزلوں سے متعلق نصیحت – شیخ عبدالعزیز بن عبداللہ بن باز

Naseeha regarding Earthquakes – Shaykh Abdul Azeez bin Abdullaah bin Baaz

اللہ تعالی کا فرمان ہے:

﴿فَكُلًّا اَخَذْنَا بِذَنْۢبِهٖ ۚ فَمِنْهُمْ مَّنْ اَرْسَلْنَا عَلَيْهِ حَاصِبًا ۚوَمِنْهُمْ مَّنْ اَخَذَتْهُ الصَّيْحَةُ ۚ وَمِنْهُمْ مَّنْ خَسَفْنَا بِهِ الْاَرْضَ ۚ وَمِنْهُمْ مَّنْ اَغْرَقْنَا ۚ وَمَا كَانَ اللّٰهُ لِيَظْلِمَهُمْ وَلٰكِنْ كَانُوْٓا اَنْفُسَهُمْ يَظْلِمُوْنَ﴾ (العنکبوت: 40)

(پھر تو ہر ایک کو ہم نے اس کے گناہ کے وبال میں گرفتار کر لیا : ان میں سے بعض پر ہم نے پتھروں والی ہوا برسائی،  اور ان میں سے بعض کو سخت چنگھاڑ نے دبوچ لیا، اور ان میں سے بعض کو ہم نے زمین میں دھنسا دیا، اور ان میں سے بعض کو ہم نے ڈبو کر غرق کردیا، اور اللہ تعالی ایسا نہ تھا کہ ان پر ظلم کرے بلکہ یہی لوگ اپنی جانوں پر ظلم کیا کرتے تھے)

اور فرمایا:

 

﴿قُلْ هُوَ الْقَادِرُ عَلٰٓي اَنْ يَّبْعَثَ عَلَيْكُمْ عَذَابًا مِّنْ فَوْقِكُمْ اَوْ مِنْ تَحْتِ اَرْجُلِكُمْ اَوْ يَلْبِسَكُمْ شِيَعًا وَّيُذِيْقَ بَعْضَكُمْ بَاْسَ بَعْضٍ ۭ اُنْظُرْ كَيْفَ نُصَرِّفُ الْاٰيٰتِ لَعَلَّهُمْ يَفْقَهُوْنَ﴾ (الانعام: 65)

(آپ کہیں کہ اس پر بھی وہ (اللہ تعالی) قادر ہے کہ تم پر کوئی عذاب اوپر سے بھیج دے  یا تو تمہارے پاؤں تلے سے  یا کہ تم کو گروہ گروہ کر کے سب کو گتھم گتھا کردے اور تمہارے ایک کو دوسرے کی لڑائی کا مزہ چکھا دے ۔ آپ دیکھئے تو سہی ہم کس طرح دلائل مختلف پہلوؤں سے بیان کرتے ہیں، شاید کہ وہ سمجھ جائیں)

 

اور فرمایا:

﴿اَفَاَمِنَ اَهْلُ الْقُرٰٓي اَنْ يَّاْتِيَهُمْ بَاْسـُنَا بَيَاتًا وَّهُمْ نَاۗىِٕمُوْنَ، اَوَاَمِنَ اَهْلُ الْقُرٰٓي اَنْ يَّاْتِيَهُمْ بَاْسُنَا ضُحًى وَّهُمْ يَلْعَبُوْنَ، اَفَاَمِنُوْا مَكْرَ اللّٰهِ ۚ فَلَا يَاْمَنُ مَكْرَ اللّٰهِ اِلَّا الْقَوْمُ الْخٰسِرُوْنَ﴾ (الاعراف: 97-99)

(کیا پھر بھی ان بستیوں کے رہنے والے اس بات سے بےفکر ہوگئے کہ ان پر ہمارا عذاب راتوں رات آپڑے اور وہ سوئے پڑے ہوں۔اور کیا ان بستیوں کے رہنے والے اس بات سے بےخوف ہوگئے ہیں کہ ان پر ہمارا عذاب دن چڑھے آ پڑے جس وقت کہ وہ کھیل کود  میں مگن ہوں۔کیا پس وہ اللہ کی اس پکڑ اور اس کی شایان شان خفیہ تدبیر وچال سے بےفکر ہوگئے ہیں،  سو اللہ کی پکڑ، خفیہ تدبیر اور اس کی چال  سے سوائے خسارے پانے والے  جن کی شامت ہی آگئی ہو اور کوئی بےفکر نہیں ہوتا )

مکمل مقالہ پڑھیں ۔ ۔ ۔

 

2015-10-26T10:48:33+00:00