دفاع ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا – فتوی کمیٹی، سعودی عرب

دفاع ام المؤمنین عائشہ رضی اللہ عنہا – فتوی کمیٹی، سعودی عرب

In Defense of Umm-ul-Mo'mineen A’aeshah RadiAllaho Anhaa – Fatwaa Committee, Saudi Arabia

دفاعِ ام المؤمنین سیدہ عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا

علمی تحقیقات اور افتاء کی مستقل کمیٹی، سعودی عرب

ترجمہ: طارق علی بروہی

مصدر: الرئاسۃ العامۃ للبحوث العلمیۃ والافتاء، المملکۃ العربیۃ السعودیۃ کی آفیشل ویب سائٹ سے ماخوذ

پیشکش: توحیدِ خالص ڈاٹ کام


بسم اللہ الرحمن الرحیم

سیدنا عمروبن العاص رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ: میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس گیا اور دریافت کیا کہ:

’’أَيُّ النَّاسِ أَحَبُّ إِلَيْكَ ؟ قَالَ: عَائِشَةُ، فَقُلْتُ: مِنَ الرِّجَالِ، فَقَالَ: أَبُوهَا ‘‘([1])

(لوگوں میں سب سے زیادہ محبوب شخصیت آپ کے نزدیک کونسی ہے؟ فرمایا: عائشہ رضی اللہ عنہا، پھر دریافت کیا کہ مردوں میں سے، فرمایا: ان کے والد (یعنی ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ))۔

تفصیل کے لیے مکمل مقالہ پڑھیں۔

 


[1] صحیح بخاری 3662، صحیح مسلم 2387۔

 

 

2012-08-27T09:34:57+00:00

Articles

Scholars