menu close menu

کیا جنت یا جہنم عقیدے کی طرح صحیح یا غلط منہج پر بھی موقوف ہیں؟ – شیخ صالح بن فوزان الفوزان

Is Jannah or Jahannam depend upon correct or incorrect Manhaj – Shaykh Saaleh bin Fawzaan Al-Fawzaan

کیا جنت یا جہنم عقیدے کی طرح صحیح  یا غلط منہج پر بھی موقوف ہیں؟   

فضیلۃ الشیخ صالح بن فوزان الفوزان حفظہ اللہ

(سنیئر رکن کبار علماء کمیٹی، سعودی عرب)

ترجمہ: طارق علی بروہی

مصدر: الأجوبة المفيدة عن أسئلة المناهج الجديدة س 47۔

پیشکش: توحیدِ خالص ڈاٹ کام


بسم اللہ الرحمن الرحیم

سوال:کیا جنت یا جہنم منہج کی صحت  (یا عدم صحت ) پر موقوف ہيں؟

جواب: جی بالکل، اگر منہج صحیح ہوگا تو صحیح منہج والا جنت میں ہوگا، اگر وہ منہج رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور منہج سلف صالحین پر رہے گا تو وہ باذن اللہ اہل جنت میں سے ہوجائےگا، اور اگر گمراہوں کے منہج پر چلے گا تو اس کے لیے آگ (جہنم) کی وعید ہے([1])۔

پس منہج کی صحت  یا عدم صحت پر جنت یا جہنم مرتب ہوتی ہیں۔

 


[1] یعنی وہ اللہ تعالی کی مشیئت کے ماتحت ہے، اور یہی اہل سنت والجماعت کا عقیدہ ہے۔ اور اگر غلط منہج چھوڑ کر صحیح منہج اپنانے پر جنت وجہنم مرتب نہ ہوتیں تو پھر آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے اس قول کا کیا فائدہ ہوتا کہ:

عنقریب میری امت تہتر فرقوں میں بٹ جائے گی، وہ سب کے سب آتش جہنم میں جائیں گے، سوائے ایک کے، پوچھا: وہ ایک کون سا ہوگا؟ فرمایا: جس پر میں اور میرے صحابہ ہيں۔ (اس حدیث کی تخریج کئی بار گزر چکی ہے)۔

پس جو نبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور ان کے صحابہ کی ہدایت پر ہوگا تو وہ اہل جنت میں سے ہوگا، اور جو اس کے علاوہ کسی اور طریقے پر ہوگا تو وہ وعید کے تحت ہے۔ اور یہ بات اہل سنت والجماعت کے یہاں معلوم اور ثابت ہے کہ جو ہلاک ہونے والے بہتّر فرقے ہيں وہ سب ہمیشہ ہمیش کے لیے جہنم واصل ہونے والے نہیں ہیں، اہل حدیث میں سے کوئی بھی یہ نہيں کہتا، لہذا اس بات پر ذرا غوروفکر کیجئے، الا یہ کہ اس کی بدعت کفریہ بدعت ہو اور اس کا فرقے مرتد  قسم کا فرقہ ہو، اللہ اعلم۔ (الحارثی)

October 4, 2017 | الشيخ صالح بن فوزان الفوزان, عقیدہ ومنہج, مقالات | 0

tawheedekhaalis is on Mixlr

www.tawheedekhaalis.com

www.tawheedekhaalis.com