menu close menu

جمعیت احیاء التراث ایک تکفیری قطبی جماعت ہے جو سلفیوں میں تفرقہ ڈالتی ہے – شیخ عبداللہ بن عبدالرحیم البخاری

Jamiat Ihya-ut-Turath is a Takfeeri Qutbee organisation which splits and tears apart the ranks of the Salafees – Shaykh Abdullaah bin Abdur Raheem Al-Bukharee

جمعیت احیاء التراث ایک تکفیری قطبی جماعت ہے جو سلفیوں میں تفرقہ ڈالتی ہے   

فضیلۃ الشیخ عبداللہ بن عبدالرحیم البخاری رحمہ اللہ

(اسسٹنٹ پروفیسر شعبہ السنۃ ومصادرھا، کلیہ الحدیث الشریف و الدسارات الاسلامیہ، مدینہ یونیورسٹی)

ترجمہ: طارق علی بروہی

مصدر: آڈیو کلپ: جمعية احياء التراث جمعية قطبية تكفيرية۔

پیشکش: توحیدِ خالص ڈاٹ کام


بسم اللہ الرحمن الرحیم

بارک اللہ فیکم، دراصل جمعیت  احیاء التراث  ایک حزبی قطبی جمعیت ہے  جو عرصۂ دراز سے موجود ہے آج کی بات نہیں ہے، اور ان کی مطبوعات انڈونیشیا، ملائشیا، تھائی لینڈ اور دیگر کچھ ممالک میں پھیلی ہوئی ہيں، جن پر ان کا باقاعدہ لوگو  ہوتا ہے۔ جی ہاں! سید قطب کی کتابیں "معالم في الطَّريق"وغیرہ، ان ممالک کی زبانوں میں تقسیم کی جاتی ہیں، پھر ہم کہیں کہ یہ سلفیت ہے!

یہ سب کچھ موجود ہے اور وہ خود اس کا اعتراف بھی کرتے ہیں، او ربعض وہ لوگ بھی جو ان کا دفاع کیا کرتے تھے اقرار کرتے ہیں کہ یہ کتابیں اور مطبوعات واقعی موجود ہیں۔

ان کا مکمل سروکار اسی بنیاد پر ہوتا ہےکہ کسی طرح سلفیوں میں تفرقہ ڈالا جائے دنیا کے کسی بھی علاقے میں کیوں نہ ہوں!

دنیا میں کوئی بھی جگہ ہو ان کا کام بس سلفیوں میں تفرقہ ڈالنا ہے۔ جب انہیں پتہ چل جائے کہ کہیں سلفی مجتمع ہیں ان شاء اللہ  تو وہاں پہنچ جاتے ہیں خواہ بحر ہند ہو یا بحر الکاہل  یا اوقیانوس، کوئی بھی جگہ ہو یہ اہل سنت سلفیوں میں ایک تیر کی مانند گھس جاتے ہیں۔

اب یا تو انہیں اپنے جیسا بنا کر اپنی چھتری تلے سب کو جمع کردیتے ہیں، پس وہ انہی کے منہج پر گامزن ہوجاتے ہیں۔ یا پھر ان میں پھوٹ ڈال دیتے ہیں اور تفرقہ بازی کی آگ کو ہوا دیتے ہیں۔

جب انہوں نے شیخ مقبل رحمہ اللہ کا ارادہ کیا تو وہ انہیں اپنے دامن فریب میں  لا کر اپنے اندر ضم نہ کرسکے، چناچہ پھر ان کے طلبہ جن کی شیخ رحمہ اللہ نے کبھی تعریف فرمائی تھی ان کو گھیرنے لگے جیسے عقیل المقطری اور الحاشدی اور فلاں فلاں جو ان کی بعض طلبہ میں سے تھے جن میں سے بعض قطبی بھی تھے تو وہ انہی کے ساتھ ہولیے، ہم اللہ تعالی ہی سے سلامتی اور عافیت کا سوال کرتے ہیں۔

ان کا سارا سروکار ہی سلفیوں میں پھوٹ ڈالنا ہے اسی طرح سے انہوں نے پاکستان کے اہلحدیثوں میں کیا اور ہندوستان وغیرہ میں بھی۔ گویا کہ جس بستی میں داخل ہوتے ہیں اس میں بگاڑ ہی پیدا کردیتے ہيں، اور اس میں بسنے والے سلفیوں میں پھوٹ ڈال دیتے ہیں۔

اللہ کی قسم! اگر آپ مشرق یا مغرب میں جائیں تو یہ ہر جگہ ان کے ساتھ تجربہ رہ چکا ہے۔  اور زیادہ تر یہ لوگ اپنے مال کے ذریعے لوگوں کو خرید لیتے ہيں۔ ہم اللہ تعالی ہی سے سلامتی اور عافیت کا سوال کرتے ہیں۔ تو ہم انہیں پاتے ہیں کہ ان کے پاس بڑے بڑے مراکز اور عمارتیں ہوتی ہیں جبکہ بیچارے سلفیوں کے پاس کوئی جگہ تک نہیں ہوتی کہ وہ وہاں جمع ہوسکیں۔

September 2, 2017 | الشیخ عبداللہ البخاری, گمراہ فرقے, مقالات | 0

tawheedekhaalis is on Mixlr

www.tawheedekhaalis.com

www.tawheedekhaalis.com