menu close menu

بعض جماعتوں کا دعویٰ کرنا کہ ہمارے مقتولین کی قبروں سے خوشبو اٹھتی ہے! – شیخ احمد بن یحیی النجمی

Reality of the claim of some Jama'ats that the graves of those killed amongst them smell of fragrance? – Shaykh Ahmed bin Yahyaa An-Najmee

بعض جماعتوں کا دعویٰ کرنا کہ ہمارے مقتولین کی قبروں سے خوشبو اٹھتی ہے!  

فضیلۃ الشیخ احمد بن یحیی النجمی رحمہ اللہ المتوفی سن 1429ھ

(سابق مفتی جنوبی سعودی عرب)

ترجمہ: طارق علی بروہی

مصدر: تأسيس الأحكام شرح عمدة الأحكام 5/272۔

پیشکش: توحیدِ خالص ڈاٹ کام


بسم اللہ الرحمن الرحیم

 

شیخ احمد النجمی رحمہ اللہ فرماتے ہیں کہ:

بعض جماعتیں یہ دعوی  کرتی ہیں کہ ان میں سے جو  قتل کردیے جاتے ہیں ان کی قبروں سے مشک کی خوشبو آرہی ہوتی ہے  (اور اسے اس کے برحق ہونے اور شہید ہونے کی دلیل بناتے پھرتے ہیں) تو ہمیں چاہیےکہ اس دعوے کو سلف صالحین کے حالات پر پیش کریں۔ کیا انہوں نے اپنوں میں سے کسی کی قبر کے بارے میں کبھی یہ دعویٰ کیا کہ اس کی مٹی سے مشک کی خوشبو آرہی ہے۔ ہرگز نہيں کبھی بھی یہ ان سے صحیح طور پر ثابت نہيں ہوسکتا۔ بلاشبہ جو لوگ اس قسم کی باتیں کرتے ہيں ان کا یہ قول باطل ہے۔ کیونکہ ان کے مقتولین (اگر واقعی فی سبیل اللہ ہوں بھی تب بھی) اصحاب رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے افضل نہیں۔

January 8, 2016 | الشیخ احمد بن یحیی النجمی, عقیدہ ومنہج, مقالات | 0

tawheedekhaalis is on Mixlr

Tawheedekhaalis.com

Tawheedekhaalis.com